Urdu Chronicle

Urdu Chronicle

کھیل

امپورٹڈ کھلاڑیوں کے باوجود قومی فٹبال ٹیم کو لگاتار دوسری شکست، 4 ملکی ٹورنامنٹ سے باہر

Published

on

قومی فٹبال ٹیم لگاتار دوسری شکست کے ساتھ ٹورنامنٹ سے باہر ہو گئی، اوورسیز کھلاڑیوں کو شامل کرنے کے باوجود فٹبال ٹیم بہتر نتائج  کیوں نہیں دے پا رہی ؟

موریشیس میں ہونے والے چار ملکی ٹورنامنٹ میں قومی فٹبال ٹیم دوسرا میچ بھی ہار گئی، کینیا نے قومی ٹیم کو ایک صفر سے شکست دے کر ٹورنامنٹ سے باہر کر دیا، قومی ٹیم اپنا پہلا میچ موریشیس سے 3 صفر سے ہاری تھی۔

فیفا کی رینکنگ میں 195 نمبر پر موجود پاکستانی فٹبال ٹیم ٹورنامنٹ کے پہلے میچ میں میزبان موریشیس نے قومی ٹیم کو شرمناک شکست دی، پہلے ہاف میں کوئی ٹیم گول کرنے میں کامیاب نہ ہوسکی اور دوسرے میچ ہاف میں موریشیس نے قومی ٹیم پر 3 گول اسکور کر لئے۔

موریشیس کیخلاف میچ میں قومی ٹیم کی کارکردگی صفر رہی، ٹورنامنٹ کے دوسرے میچ میں پاکستان نے کینیا کیخلاف اچھے کھیل کا مظاہر ہ کیا ،کھلاڑیوں کی باڈی لینگویج مثبت نظر آئی مگر بدقسمتی سے میچ جیتنے میں کامیاب نہ ہو سکی اور کینیا کی ٹیم نے ایک صفر سے مقابلہ اپنے نام کیا۔

اس سے قبل جب قومی ٹیم 1978 میں کینیا کیخلاف میچ کھیلی تھی کو کینیا نے قومی ٹیم کو 0-8 سے شکست دی تھی۔

عیسیٰ سلمان ،اوٹس خان، راہس نبی جیسے اوور سیز کھلاڑیوں کو ٹیم میں شامل کرنے کے باوجود قومی فٹبال ٹیم جیتنے میں کامیاب  نہیں ہو رہی جس کی سب سے بڑی وجہ  پاکستان فٹبال فیڈریشن  کی غلط پالیسیاں ہیں ، کبھی فٹبال فیڈریشن کی صدارت کیلئے جھگڑے اور کبھی فنڈز کی عدم دستیابی کا رونا،اس سب کے ساتھ ساتھ فیڈریشن کے اند ر ہونے والی سیاست بھی پاکستان میں فٹبال جیسی گیم کو بہت نقصان پہنچا رہی ہے۔

پاکستانی اسٹریٹ چائلڈز بین الاقوامی مقابلوں میں نمایاں کارکردگی  دکھا رہے ہیں تو کیا وجہ  ہے کہ  قومی فٹبال ٹیم پرفام نہیں کر پارہی؟ اس سب کی اصل وجہ حکومت کی طرف سے فٹبال کھیل کی طرف توجہ نہ کرنا ہے ورنہ  کسی بھی شعبے میں  پاکستان میں ٹیلنٹ کی کوئی کمی نہیں ہے۔

حسن تنولی نوجوان صحافی ہیں۔ انہوں نے ہزارہ یونیورسٹی مانسہرہ سے کمیونیکیشن میڈیا سٹیڈیز میں بی ایس کیا۔قومی و بین الاقوامی میڈیا کو دلچسپی سے دیکھتے ہیں، کھیل اور انٹرٹینمنٹ سے لگاؤ رکھتے ہیں۔

Continue Reading
Click to comment

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

مقبول ترین